مزید برآں جامعہ کی طرف سے منعقدہ چہاردہ معصومین علیھم السلام کے ایام کی مناسبت سے مجالس عزا ، محافل میلاد و جشن و مسالمہ بعض دیگر تقاریب اور قومیات سے متعلق اجتماعات کا انعقاد بھی ہوتا ہے۔ مومنین کی طرف سے مجالس تراحیم کے پروگرام بھی علی مسجد میں منعقد ہوتے ہیں۔

جمعہ،عیدین اور ایام عزاداری میں شریک ہونے والے افراد کی بڑھتی ہوئی تعداد کے پیش نظر (اگست 2000 ء) میں مزید توسیع کی گئی ہے۔2004 ء میں مسجد کا ھال بھی دو منزلہ کر دیا گیا۔ اس کے بعد بیک وقت کئی ہزار افراد کے نماز ادا کرنے اور بیٹھنے کی گنجائش ہے۔ کئی سالوں سے نماز جمعہ میں خواتین کی شرکت کے پیش نظر پردہ کا اہتمام کیا گیا ہے اسی طرح رمضان المبارک کے آخری عشرہ میں اعتکاف میں شرکت کرنے والی خواتین کے لیے ایک حصہ مختص کر دیا جاتا ہے۔ طلباء مسجد میں مطالعہ اور مباحثہ بھی کرتے ہیں۔

تاریخ تہذیب انسانیت علم کی ممنون ہے قوموں کی روحانی اور جسمانی زندگی علم ہی سے پروان چڑھتی ہے ۔شریعت خاتم المرسلین میں علم کو جو عزت و عظمت عطا کی گئی ہے وہ ادیان عالم میںسے کسی کو نصیب نہیں ہوئی ۔ کلام پاک کا فرمان ”ھل یستوی الذین یعلمون والذین لایعلمون“ظاہر کرتا ہے کہ علم کے بغیر انسان نہ صرف حیوان بلکہ حیوان سے بد تر ہے ۔ نبو ت کے آخری تاجدار ختم المر سل کے فرمان کے پیش نظر پاکستا ن کی سب سے عظیم یونیورسٹی حوزہ علمیہ جامعة المنتظر لاھور( شیعہ اسلامی یونیورسٹی ) میں عظیم ترین لائیبر یری کا قیام عمل میں لایا گیا ہے ۔ جس سے پاکستا ن و غیرممالک کے ہزارہا طلبا ءاستفادہ حاصل کرنے کے بعد ملک کے مختلف شہروں ،قصبوں ،دیہاتوں میں علوم محمد وآل محمد کی شمع روشن کر رہے ہیں ۔ لائیبریری کا وسیع عریض ہال جامعہ ھذا میں واقع علی مسجد کی چھت کے ساتھ بالائی منز ل پر واقع ہے ۔ ہال کے دروازوں کے ساتھ کیٹا لاگ موجود ہے جن میں مختلف موضوعات پر مشتمل کارڈ موجود ہیں ۔ قارئین بڑی آسانی کے ساتھ کیٹا لاگ دیکھ کر اپنی پسند کی ہوئی کتاب حاصل کر سکتا ہے ۔

کتابیں مختلف موضوعات کے تحت مختلف الماریوں میں قرینے سے سجائی گئی ہیں ۔کتاب کی آراستگی اور صفائی کا خاطر خواہ خیال رکھا جاتا ہے ۔تمام کتب سفید کاغذ سے ٹیپ لگا کر اس پر اس کا نمبر اور الماری کا خانہ نمبر درج کیا گیا ہے ۔جس سے کتاب حاصل کرنا آسان تر ہو گیا ہے اور اس سے لائیبریر ی کی زیب وزینت اور آراستگی میں اضافہ ہو گیا ہے ۔ شیعہ اسلامی یونیورسٹی جامعة المنتظرمیں کتب کے عظیم الشان ذخیرہ میں قرآن پاک کے قدیم و نادر ،نایاب نسخوں کے علاوہ علوم قرآن ،تفسیر قرآن ،حدیث ،اصول حدیث ،رجال حدیث ،فلسفہ ،فقہ ،منطق ،عقائد ،مناظرہ ،علم الکلام ،اخلاقیات ،خطبات ،اقتصادیات ،لغت ،حزینہ ،شعرو ادب ،مجالس ،نحو،صرف ،اسلام شناسی ،ادیان عالم پر مشتمل ہزار ہاکتب کا ذخیرہ موجو دہے اس کے علاوہ سید المرسلین اور اولاد سید المر سلین کی مفصل سوانح حیات اور کتب مقاتل پر مشتمل ہزاروں کتب کا ذخیرہ موجود ہے ۔ لائبریری ھٰذا میں تفاسیر اھل سنت میں تفسیر طبر ی ،رازی ،نیشاپوری ،خازن ،بیضاوی ،کشاف ،درمنثور،اتقان ،مظہری ،روح المعانی ،قاسمی ،طنطاوی اور تفاسیر امامیہ میں تفسیر برھان ،مجمع البیان ،منبح الصادقین ،تفسیر قمی ،جامعہ بروجردی ،اور اس دور کی اہم تفسیر نمونہ جس کا ترجمہ ابوذر زماں محسن ملت علامہ سید صفدر حسین نجفی اعلی اللہ مقامہ نے فرماکر ملت اسلامیہ پر احسان فرمایا ہے ۔


جامعة المنتظر کی دوسری منزل پر کتب لائبریری کے ساتھ ایک بڑے کمرے میں خوبصورت اندازمیں کیسٹ لائبریری بنائی گئی ہے ۔ کتب لائبریری کی طرح کیسٹ لائبریری بھی ملت تشیع کا ایک قیمتی اثاثہ ہے ۔
ترتیب :
      المنتظر کیسٹ لائبریری میں جدید کمپیوٹر ،TV ،VCR،ٹیپ اور ٹیپ ریکارڈر موجود ہیں ۔
تقسیم :
      کیسٹ لائبریری میں مختلف علوم پر مشتمل تقریباً 12ہزار کے قریب آڈیوکیسٹ اور ویڈیو کیسٹوں کا ایک بڑا ذخیرہ موجود ہے ۔اس کے علاوہ بڑی تعداد میں مختلف موضوعات پر سی ڈیز موجود ہیں ۔
نحو : اس میں نحومیر ،عوامل ،شرح مائة عامل ،ملا محسن ،ھدایة النحو ،صمدیہ ،شرح نووی ،کافیہ ،سیوطی ۔
صرف : شر ح امثلہ ،صرف میر ،تصریف ،علم الصیغہ ۔
منطق : صغرٰے ،کبرٰے ،میزان ،،منطق ،مرقاة ،شرح تہذیب ،سلم العلوم ،المنطق المظفر۔
اصول : مبادی الاصول ،تحریر المعالم ،اصول الفقہ ،رسائل ،کفایة الاصول ،خارج اصول
فقہ : توضیع المسائل ،تبصرة المتعلمین ،شرائع الاسلام ،شرح لمعہ ،مکاسب ۔
فلسفہ : روش ریالثم ،بدایة الحکمہ ،نہایة الحکمہ اور اسفار (فارسی ) ۔
بلاغت : ، جواہر البلاغہ مختصر المعانی
رجال : علم الرجال
عقائد : شرح باب حادی عشر ،اصول عقائد، بدایۃ المعارف ۔
تفسیر : تفسیر القرآن،تفسیر بیان الخوئی ،تفسیر موضوعی کی مکمل کیسٹیں موجود ہیں ۔
اردو :
      اردو میں یہ کیسٹیں علامہ اختر عباس نجفی ،محسن ملت علامہ صفدر حسین نجفی ،آیت اللہ حافظ سید ریاض حسین نجفی (پرنسپل حوزہ )علامہ موسیٰ بیگ نجفی ،علامہ حافظ محمد ثقلین نقوی ،علامہ محمد رضا غفاری ،علامہ محمد اسلم صادقی ،علامہ محمد افضل حیدری کی دروس کی مکمل کیسٹیں لائبریری کی زینت ہیں ۔
فارسی :
      آیت اللہ محسن افغانی ،آیت اللہ ناصر مکارم شیرازی ،محترم استاد عبائی ، محترم استاد اعتمادی،محترم استاد پایانی ،محترم استاد طالقانی ،محترم استاد آدینہ ،محترم استاد آقائی فلسفی،علامہ شھید مطہری ،آیت اللہ حسن رضا طاہری (خرم آبادی )اورمحترم استاد جو ادی کے دروس کی کیسٹیں موجود ہیں ۔
درس قرآن :
      درس قرآن ،تفسیر قرآن ،ترجمہ قرآن ،اس حصہ میں علامہ حافظ سید ریاض حسین نجفی صاحب ،حافظ ثقلین نقوی صاحب ،علامہ موسیٰ بیگ نجفی صاحب کی کیسٹیں موجود ہیں ۔
تلاوت قرآن :
      تلاوت قرآن مجید کے حوالے سے کیسٹ لائبریری کے اندر دنیا اسلام کے نامور قرآء(ایران ،مصر اور دیگر ممالک)کی سینکڑوں کیسٹیں موجود ہیں۔ان قرآءحضرات میں استاد عبد الباسط ،استاد مصطفٰے اسماعیل ،استاد مجید جعفری تبار ،استاد مصطفٰی غلوش ، آغاجواد فروغی ،آغاکریم منصوری ، استاد ابراھیم خاکی ،استاد شحات محمد انور ،استاد نعینع، استاد متولی ،استاد سعید مسلم ،استاد پر ہیز گار ،استا دمحمد صدیق منشاوی ،علی بن احمد اعجمی ،محمد ایوب اور شیخ عبدالرحمن السدیس کی(ترتیل ،تحقیق ،آموزش صوت ولحن )کی کیسٹیں لائبریری کی زینت میں اضافہ ہیں ۔
عشرہ محرم الحرام ومتفرق مجالس :
      اس حصہ میں جناب محسن ملت علامہ صفدر حسین نجفی اعلی اللہ مقامہ،علامہ اختر عباس نجفی ،آیت اللہ حافظ سید ریاض حسین نجفی ،علامہ محمد حسین ڈھکو ،مفتی سید کفایت حسین نقوی،علامہ سید اظہر حسن زیدی ،علامہ رشید ترابی ،علامہ سید نصیرالاجتہادی ،علامہ غلام حسین نجفی شہید ،علامہ محمد حسین لکھنوی ،مولانا گلفام حسین ھاشمی، پروفیسر سجاد رضوی ،علامہ عبدالحکیم بوترابی ،علامہ حافظ سید محمد ثقلین نقوی ،مولانا حافظ حسنین نقوی ،مولانا حافظ سبطین نقوی ،علامہ محمد حسین اکبر ،مولانا آغا سید علی حسین قمی ،حافظ سید ذوالفقار علی بخاری ،مولانا محمد عباس قمی ،مولانا غلام عسکری ،علامہ سخاوت حسین سندرالوی ،علامہ نسیم عباس رضوی ،مولانا مقبول حسین ڈھکو ،مولانا عاشق حسین قیامت ،مولانا جان علی کاظمی ،علامہ انوار حسین شمسی ،علامہ محمد افضل حیدری ،مولانا ملک اعجاز حسین ،مولانا سید تطہیر حسین زیدی ،مولانا ظہور خان صاحب ،مولانا سید حسن ظفر نقوی ،علامہ طالب جوہری ،علامہ تقی نقوی،علامہ علی نقی نقن ،علامہ کلب صادق ،مولانا منظور حسین عابدی ،مولانا ضیغم رضوی ،علامہ رضی جعفر ،مولانا شہنشاہ نقوی ،علامہ عقیل الغروی ،علامہ ذکی باقری،علامہ حسین بخش جاڑا ،مولانا محب حسین ،مولانا حافظ سیف اللہ ،علامہ حافظ تصدق حسین اور ان کے علاوہ دوسرے علماءکرام کی تقاریرموجود ہیں۔جن سے جامعہ ھٰذا اور ملک بھر کے دوسرے دینی مدارس کے طلباءکرام استفادہ حاصل کرتے ہیں ۔
خطبات جمعہ:
      اس حصہ میں خطبات جمعہ آیت اللہ حافظ سید ریاض حسین نجفی ،علامہ حافظ سید محمد ثقلین ،مولانا موسٰی بیگ نجفی،اور علامہ سید تطہیر زیدی صاحب موجود ہیں۔
درس اخلاق :
      ملک کے معروف مبلغ و مقرر علامہ صادق حسن نجفی تبلیغ بعنوان سوانح چہادہ معصومین علیھم السلام ،تفسیر ،تاریخ اور اسلام شناسی کے بارے میں مکمل تین سو کیسٹ کا سیٹ موجود ہے ۔
ویڈیو کیسٹ :
      اس طرح ویڈیو کیسٹ کے حصہ میں نحو،منطق، عقائد ،اصول ،فقہ کے دروس شامل ہیں ۔مجالس و عشرہ جات میں علامہ اختر عباس نجفی صاصب ،آیت اللہ حافظ سید ریاض حسین نجفی ،علامہ حسین بخش جاڑا ،علامہ حسن رضا غدیری ،علامہ محمد صادق حسن نجفی ،مولانا فاضل حسین موسوی ،علامہ حافظ سید ثقلین نقوی اور دیگر بہت سے علماء کرام کی سینکڑوں کیسٹیں زینت لائبریری ہیں ۔
سیکیورٹی :
      آڈیو کیسٹ کی ممبر شب کے لئے مبلغ 125روپے سیکیورٹی اور 10روپے ماہانہ وصول کیے جاتے ہیں ۔لائبریری سے طلباءکرام کے علاوہ دوسرے حضرات بھی استفادہ کرتے ہیں ۔
عملہ :
      ۔کتب لائبریری کی طرح جامعہ ھٰذا کے پرنسپل آیت اللہ حافظ سید ریاض حسین نجفی کی سرپرستی اور ھدایت کی روشنی میں کیسٹ لائبریری کو مفید تربنانے کا عمل جاری ہے ۔جس میں کیسٹ لائبریری کے انچارج اصغر عباس اسدی خوش اسلوبی سے اپنے فرائض سرانجام دے رہے ہیں

یہ اہم شعبہ گزشتہ دس سال سے کام کر رہا ہے۔ ماہنامہ المنتظر کی کمپوزنگ اور دیگر متعلقہ امور کے علاوہ طلبا کی کمپیوٹر سے شناسائی کی سہولیات مہیا ہیں۔ جامعہ کا انٹر نیٹ کے ذریعے دنیا بھر سے رابطہ اور پوچھے گئے فقہی مسائل اور استفسارات کے لئے جامعہ کے ای میل پر رابطہ کرنے کی سہولت میسر ہے۔ ای میل ایڈریس:jaamia@hotmail.com

وفاق المدارس الشیعہ پاکستان ملک بھر کے شیعہ دینی مدارس کی واحد تنظیم ہے ۔ اس کی داغ بیل بزرگ علماء کے پاکیزہ افکار نے ڈالی، اس کے تاریخی منظر کا جائزہ لینے سے پتہ چلتا ہے کہ 1958ء میں پاکستان کے شیعہ مدارس کا سب سے پہلا ملک گیر اجتماع جامعتہ المنتظر کی تحریک پر منعقد ہوا جس سے شیعہ مدارس کے باہمی ارتباط کا باقاعدہ آغاز ہوگیا اس اجتماع میں تمام مدارس کے مشترکہ نصاب ،سالانہ تعطیلات اور طریق امتحانات جیسے اہم امور پر بحث و گفتگو کی گئی۔ ان امور کی نگرانی کے لیئے جناب علامہ نصیر حسین فاضل عراق کو متفقہ طور پر ذمہ داری سونپی گئی۔ 1962ء میں جامعہ امامیہ لاہور میں شیعہ مدارس کا دوسرا عظیم اجتماع منعقد ہو ۔ اس اجتماع میں مدارس دینیہ کی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا مدارس کے درمیان باہمی رابطہ کو وسعت دینے کے لیئے مجلس نظارت شیعہ مدارس پاکستان کے نام سے ایک تنظیم کا قیام عمل میں لایا گیا گیا۔علامہ شیخ محمد حسین نجفی آف سرگودھا کو مجلس کا ناظم مقرر کیا گیا۔لیکن بعد میں مجلس کی کارکردگی میں مطلوبہ پیش رفت نہ ہو سکی۔ 17نومبر 1976ء کو شیعہ مدارس کا تیسرا اہم اجتماع پیر محمد ابراہیم ٹرسٹ کی تحریک پر مدرسہ جعفریہ کراچی میں منعقد ہوا ۔اس اجلاس میں جامعتہ المنتظر کے مروجہ نصاب کو تمام مدارس کے لیئے منظور کر لیا گیا۔مدارس کے جملہ امور کی دیکھ بھال اور متفقہ فیصلوں پر عمل درآمد کرانے کے لیے ایک نگران بورڈ تشکیل دیا گیا ، لیکن پیر محمد ابراہیم ٹرسٹ کے بانی کی اچانک وفات کے باعث یہ پروگرام ادھورہ رہ گیا ۔ جنوری 1979ء میں حکومت نے قومی کمیٹی برائے دینی مدارس بنائی جس میں تمام مدارس کے مشترکہ نصاب اور اسناد کے اجراء پر غور و خوض کیا گیا اس کمیٹی میں دیگرمکاتب فکر کے علاوہ شیعہ مدارس کی نمائندگی علامہ سید صفدر حسین نجفی اورمولانا شبیہ الحسنین محمدی نے کی۔

29,30مارچ 1979ء کو جامعتہ المنتظر میں تمام شیعہ مدارس کا عظیم اجتماع منعقد ہوا۔جس میں حکومت سے مربوط اموراور دینی مدارس کے دیگر مسائل کے بارے میں غور و فکر کیا گیا اس اجتماع میں متفقہ طور پر دینی مدارس کی باقاعدہ تنظیم کے قیام کو آخری شکل دینے اور اسے فعال بنانے کے فیصلے پر عمل درآمد ہوا اور مجلس نظارت جیسے سابقہ تنظیمی ڈھانچوں کے نتیجے میں وفاق المدارس شیعہ پاکستان کا قیام عمل میں آیا۔ اپریل 1981ء میں عزیز المدارس چیچہ وطنی میں وفاق المدارس شیعہ پاکستان کا اہم اجلاس منعقد ہوا اس اجلاس میں دیگر امور کے علاوہ تمام علماء کرام نے متفقہ طور پر علامہ سید صفدر حسین نجفی کو وفاق المدارس کا صدر منتخب کیا اور انہیں اس تنظیم کو فعال بنانے کے مکمل اختیارات سونپ دیے گئے۔ قومی کمیٹی برائے دینی مدارس کی 55باقاعدہ نشستوں میں جامعہ کی نمائندگی کرتے ہوئے علامہ صاحب کی باقاعدہ شرکت اور انتھک محنت کے نتیجے میں ایک مشترکہ نصاب کی منظوری اور شیعہ طلباء کے لیے درجہ سلطان الافاضل کی سند کو ایم ۔اے عربی اسلامیات کے مساوی منظور کرانے میں کامیابی حاصل ہوئی۔علامہ نجفی صاحب نے امتحانی بورڈ قائم کیا جس کے فرائض میں باقاعدہ امتحان کے بعد کامیاب طلباء کو سند جاری کرنا شامل ہے۔اس سند کی بدولت سینکڑوں شیعہ فارغ التحصیل طلباء تعلیمی اداروں اور دیگر محکموں میں تدریسی خدمات سر انجام دے رہے ہیں ۔ 2 جنوری 1987ء کو جناب صدر وفاق المدارس نے دستور کمیٹی اور نصاب کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں دستور کی باقاعدہ منظوری دی اور مرتبہ نصاب پر غور و فکر کے لیے جامعہ میں بزرگ علماء کرام کی اہم نشست بلائی گئی جس میں اہم دینی مدارس کے اکثر مدرسین اعلیٰ اور اساتذہ نے شرکت فرمائی۔ اس اجلاس میں وفاق کا دستور متفقہ طور پر منظور کیا گیا اور علامہ سیدصفدر حسین نجفی کو مزید 5 سالوں کے لیئے وفاق کی صدارت کے فرائض سونپے گئے ۔ وفاق المدارس شیعہ پاکستان، جامعتہ المنتظر تمام دینی مدارس کی ترجمانی کے فرائض سر انجام دیتا ہے۔ وفاق المدارس شیعہ پاکستان ، جامعتہ المنتظر لاہور کی طرف سے شائع شدہ دستور پر ملک بھر بزرگ علماء کرام کے تائیدی دستخط جامعہ کے تمام مدارس کا نمائندہ ہونے کی تصدیق کرتے ہیں ۔اور اس کے فیصلوں کو تمام مدارس کے علماء کرام کی حمایت حاصل ہے۔ وفاق المدارس شیعہ پاکستان کے موجودہ سربراہ جناب علامہ سید ریاض حسین نجفی صاحب ہیں جنہیں مجلس عاملہ نے 3اپریل 2000ء کو آیندہ 5 سالوں کے لیئے رئیس الوفاق منتخب کیا ہے۔

جامعہ میں رہائش پذیر افراد اور اہل محلہ کے لئے علی مسجد و امام بارگاہ کے باہر"المنتظر فری ڈسپنسری" عرصہ دراز سے خدمات سرانجام دے رہی ہے جس میں تجربہ کار ڈاکٹر روزانہ دو گھنٹے شام کے اوقات میں مفت طبی مشورے دیتے ہیں ۔ اس ڈسپنسری میں معیاری ادویات محض دس روپے کی پرچی پرمہیا کی جاتی ہیں۔

علی مسجد سے ملحق یہ عزاء خانہ خواتین کے لئے بنایا گیا ہے۔ یہاں پر پہلی محرم سے لے کر 8 ربیع الاول تک عزاداری ہوتی ہے جس میں خواتین عالمہ/ذاکرہ خطاب کرتی ہیں۔ اس کے علاوہ دوران سال دیگر مناسبتوں سے بھی عزاداری و جشن کی محافل منعقد ہوتی ہیں ۔ علی مسجد کے ساتھ ملحقہ نیا تعمیر شدہ اضافی ہال، عزاء خانہ فاطمیہ کے ساتھ ملحق ہے اس طرح اس حصہ کی گنجائش اور خوبصورتی میں کافی اضافہ ہوا ہے۔

مقامی مومنین کے علاوہ اندرون و بیرون ملک سے پوچھے جانے والے شرعی مسائل کا حل اولین فرصت میں ارسال کیا جاتاہے روزانہ بذریعہ ٹیلی فون رابطہ کرنےوالوں کےمسائل کا حل بھی بیان کیا جاتا ہے۔

بوقت ضرورت بالعموم اور رمضان المبارک و محرم الحرام میں بالخصوص سینئر طلباء تبلیغاتی امور کی انجام دہی کےلئے ملک کے مختلف حصوں میں بھیجے جاتےہیں۔

متعدد گراں قدر کتابیں شائع کی گئیں جامعہ کے تعاون سے بعض اداروں نے اہم کتابیں شائع کیں۔ یہ آثار ایک عرصہ سے تشنگان علم و حکمت کو سیراب کر رہے ہیں۔ اور یہ چشمہ فیض جاری و ساری ہے۔ 1999 ء میں اعمال، ادعیہ و زیارات وغیرہ کی مشہور کتاب مفاتیح الجنان کا مکمل اردو ترجمہ شائع ہوا ہے جناب آیت اللہ حافظ سید ریاض حسین نجفی مدظلہ العالی کا گراں قدر علمی کارنامہ ہے۔ 2009 ء سے اس شعبہ کا نام "دارالتحقیق والتالیف " قرار دیا گیا ہے۔ جس کے زیر اہتمام جامعہ کے فاضل استاد جناب مولانا ڈاکٹر سید محمد نجفی کی متعدد، مفید و گراں قدر تصانیف و تراجم شائع کئے گئے ہیں۔

جلیل القدر مرجع جہان تشیع آیت اللہ العظمی الشیخ محمد فاضل لنکرانی قدس سرہ کے اصرار پر حوزہ علمیہ جامعتہ المنتظر کے سربراہ جناب آیت اللہ حافظ سید ریاض حسین نجفی مدظلہ العالی نے 1998 ء میں باضابطہ طور پر درس خارج کی تدریس کا آغاز فرمایا۔ اصول کا دورہ چند سال قبل مکمل ہوا جبکہ فقہ کا جاری ہے۔

سہولیات سے آراستہ ، ائرکنڈیشنڈ غسل خانہ برائے میت موجود ہے۔کفن مفت مہیا کیا جاتا ہے۔ گزشتہ دو سال سے ایک عدد نئی ایمبولینس حاصل کرلی گئی ہے۔ جو کہ ایک فون کال پر کسی بھی علاقے میں مہیا کر دی جاتی ہے۔

حوزہ علمیہ جامعۃ المنتظر کی طرف سے عازمین حج کی راہنمائی کیلئے 1984 میں‌حج کاروان تشکیل دیا گیا جس میں جامعہ کے مرحوم استاد جناب حجۃ الاسلام مولانا سید محمد عباس نقوی ایک طویل عرصہ تک خدمات انجام دیتے رہے اور ان کے معاون کے طور پر جناب حجۃ الاسلام والمسلمین مولانا محمد افضل حیدری صاحب بھی زحمت کرتے رہے۔ مولانا سید محمد عباس نقوی کی رحلت کے بعد جناب مولانا محمد افضل حیدری صاحب ’’ کاروان حج جامعۃ المنتظر ‘‘کے مسئول کے طور پر عازمین حج کی رہنمائی کر رہے ہیں۔ فقہی مسائل و مناسک حج میں‌راہنمائی کے ساتھ ساتھ سفر ،رہائش و طعام کے لحاظ سے اس کاروان نے عازمین حج کو ہمیشہ مطمئن کیا ہے ۔ جامعۃ المنتظر حج،عمرہ پرائیویٹ لمیٹیڈ۔

قرآن فہمی چونکہ اسلامی معاشرے کی بنیادی ضرورت ہے اور اس کی تفسیر اور موضوعات و معارف سے آگاہی نہایت اہم مسئلہ ہے جس کے پیش نظر جناب محسن ملت مولانا سید صفدر حسین نجفی علیہ الرحمۃ نے اپنے معتمد جناب الحاج سیٹھ نوازش علی صاحب ،عاشقان قرآن ،احبات وہمکاروں کے تعاون سے 1985میں‌ادارہ مصباح القرآن قائم کیا تاکہ قرآن مجید اور قرآنیات پر مبنی کتب کی اشاعت کا اہتمام کیا جا سکےاور بزرگ محققین و علماء کی کاوشوں کو تشنگان علوم و معارف تک پہنچایا جا سکے۔ ادارہ کے قیام کی بنیادی سوچ اس وقت پیدا ہوئی جب ملک میں اردو زبان میں قرآنیات پر کام کرنے کی ضرورت محسوس کی گئی جس کے نتیجے میں حضرت محسن ملت سید صفدر حسین نجفیٌ نے تفسیر نمونہ کے ترجمہ کا آغاز کیا تو اس وسیع منصوبہ کی تکمیل کے لئے اس تک محدود رہنے کی بجائے قرآن و قرآنیات کے موضوع پر وسعت سے کام کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

مصباح القرآن ٹرسٹ کے قیام کا اصل مقصد اردو زبان میں تفسیر قرآن اور قرآنیات کی کتب کی اشاعت کے ذریعے قرآن فہمی کو آسان بنانا اور معافی و مفاہیم کو سادہ عام فہم زبان میں‌لوگوں تک پہنچانا ہے کیونکہ عربی و فارسی زبانوں میں‌اس حوالہ سے جو کام ہوا ہے وہ نہایت وسیع ہے قرآنیات کے ماہر محققین نے تربیتی و موضوعی تفسیر کی بنیاد پر جو عظیم علمی کتب تحریر فرمائی ہیں ان سے استفادہ کرنے کے لئے ضروری اقدامات کرنا ٹرسٹ کے بنیادی مقاصد میں شامل ہے۔

مصباح القرآن کا آغاز عصر حاضرکی عظیم تفسیر اور نہایت مفید معلومات پر مبنی علمی کتاب تفسیر نمونہ سے ہوا اگرچہ اس کے ترجمہ و اشاعت کا منصوبہ نہایت اہم اور بہت بڑا تھا لیکن فارسی زبان میں 27 جلدوں پر مشتمل یہ عظیم تفسیر قرآن جو بزرگ محقق حضرت آیت اللہ العظمیٰ آقائی ناصر مکارم شیرازی کی زیر نگرانی دس محققین کی کاوش کا نتیجہ ہے،حضرت علامہ سید صفدر حسین نجفی رحمۃ اللہ علیہ نے اپنے دست مبارک سے اس کا ترجمہ فرمایا اور آیات مبارکہ کے سلیس و رواں ترجمہ کے ساتھ ساتھ ان کی لفظی وضاحت اور موضوعات کی تشریح مربوط روایات کی روشنی میں تاریخی حوالوں سے مزین کرکے جدید علوم کے موضوعات کی بحثوں‌سے آراستہ فرمایا تاکہ ہر طبقہ فکر کے لوگ یکساں طورپر اس سے استفادہ کر سکیں اس طرح مصباح القرآن ٹرسٹ کا بتدائی عظیم منصوبہ خدا کی عنایت خاصہ سے پایہ تکمیل کو پہنچا۔

صاحبان فکر کی تسکین کے لیے اعلیٰ معیار کا یہ ماہنامہ جامعہ کی فخریہ پیشکش ہے جسے ہر ماہ ،اندرون و بیرون ملک اراکین کے گھر و دفتر تک پہنچایا جاتا ہے۔ ملک بھر کے چار سو سے زائد مدارس کو وفاق المدارس کی طرف سے بلا قیمت بھیجا جاتا ہے۔

آئمہ معصومین علیہ السلام کی ولادت و شہادت کی مناسبت سے خصوصی پروگرام کئے جاتے ہیں اس کے علاوہ مومنین کی طرف سے منعقد کرائی جانے والی مجالس کے انتظامات کئے جاتے ہیں۔ مجلس کے پیشگی بکنگ کرانا ضروری ہے۔

ہر سال موسم گرما کی تعطیلات میں سکولوں،کالجوں کے طلباء کے لئے اسلام شناسی کا شارٹ کورس منعقد کیا جاتاہے۔

اہور کے مقامی طلباء و طالبات کی راہنمائی کے لئے ہر اتوار کو دوگھنٹے کا اسلام شناسی کا پروگرام منعقد کیا جاتا ہے جس میں‌جامعہ کے استاد اور شعبہ طالبات کی معلمات الگ الگ کلاسوں میں معارف اسلامی کی تعلیم دیتے ہیں۔اس کے ساتھ جامعہ کی طرف سے یہ پیشکش بھی کی گئی ہے کہ اگر لاہور کے کسی محلے یا علاقے میں مناسب تعداد میں طلباء و طالبات کی کلاسوں کے لئے انتظام کیا جائے تو استاد/معلمہ مہیا کی جائے گی۔